درہم

آئرش معیشت دانوں نے سونے چاندی کے سکوں پہ عالمی معیشت کے واپس جانے کا عندیہ دے دیا

جیسا کہ ہم جانتے ہیں دنیا کوویڈ ۔19 / کرونا وائرس کے نتیجے میں یکسر تبدیل ہونے والی ہے۔ ہم اپنی زندگی کیسے گزارتے ہیں، ہم کس طرح کام کرتے ہیں، ہم کیسے معاشرتی بناتے ہیں اور رقم کی چالیں کس طرح بدلے گی اور گہرائی سے۔ ہم دوسروں کو پہلے تینوں کا پتہ لگانے …

آئرش معیشت دانوں نے سونے چاندی کے سکوں پہ عالمی معیشت کے واپس جانے کا عندیہ دے دیا Read More »

تنخواہ مقرر کرنے کی شرعی حد

نبی کریمﷺ نے مکہ مکرمہ کے حاکم حضرت عتاب بن اسید رضی اللہ عنہ کی سالانہ تنخواہ چالیس اوقیہ چاندی مقرر فرمائی۔ چالیس اوقیہ کا مطلب سولہ سو درہم ہے۔ خلفاء راشدین نے بہت ہی کم تنخواہ بیت المال سے وصول فرمائی لیکن شرعی طور پہ تنخواہ کی کوئی حد مقرر نہیں۔ حضرت ابوبکر صدیق رضی …

تنخواہ مقرر کرنے کی شرعی حد Read More »

سونا چاندی کے سکے

دنیا میں "چیز کے بدلے چیز/ تبادلے کا نظام” یعنی “Barter system” سے لین دین  ہوتا تھا۔ تین ہزار قبل مسیح چاندی کے خام ڈلے بطور "زر” کے استعمال ہونے کے ثبوت ملتے ہیں۔ جنہوں نے بعد ازاں سکوں کی شکل اختیار کرلی۔ شہری اور علاقائی ریاستوں میں سونے اور چاندی کے سکےبطور "زر” استعمال …

سونا چاندی کے سکے Read More »

error: Content is protected !!