تنخواہ مقرر کرنے کی شرعی حد

نبی کریمﷺ نے مکہ مکرمہ کے حاکم حضرت عتاب بن اسید رضی اللہ عنہ کی سالانہ تنخواہ چالیس اوقیہ چاندی مقرر فرمائی۔ چالیس اوقیہ کا مطلب سولہ سو درہم ہے۔ خلفاء راشدین نے بہت ہی کم تنخواہ بیت المال سے وصول فرمائی لیکن شرعی طور پہ تنخواہ کی کوئی حد مقرر نہیں۔ حضرت ابوبکر صدیق رضی …

تنخواہ مقرر کرنے کی شرعی حد Read More »