مغل دور حکومت

ظہیر الدین محمد بابر، پہلا مغل بادشاہ ۔۔۔ امیر تیمور کی پانچویں پشت سے اور ماں چنگیز خان کی چودھویں پشت میں سے تھی۔ لین پول کے الفاظ میں۔ "اس کی رگوں میں دو فاتحین، امیر تیمور اور چنگیز خان کا خون تھا”۔ بابر کی وفات کے بعد اس کے بیٹے  "نصیرالدین محمد ہمایوں نے تخت سنبھالا۔ مغل مقامی نہ تھے اور ہند میں اجنبی تھے۔ اس لئے غیر مسلم مقامی اقوام نے غیرملکی سمجھ کر موقع ملتے ہی ہمیشہ بغاوت کی اور عام حالات میں باامر مجبوری تعاون کیا۔جس کی  وجہ سے بغاوتیں سر اٹھاتی رہتی تھیں۔

شیر شاہ سوری نے مغلوں سے حکومت لی۔ لیکن اس وقت وہ ۶۸ سال کا تھا اور پانچ سال حکومت کرنے کے بعد وہ فوت ہوگیا۔ اس کے بعد قریب تھا کہ ہندو اقتدار سنبھال جاتے کہ مغل بادشاہ، جلال الدین محمد اکبر نے اپنے امراء کے تعاون سے پانی پت کی دوسری جنگ میں ہیموں کو شکست دے کرتخت دہلی  کو سنبھالا۔

اکبر کی پرورش خالص عسکری انداز پہ ہوئی اور وہ دینی و دنیاوی علوم سے  کسی حد تک محروم رہا۔ اس کی سیاسی بصیرت میں یہ بات گھر کر چکی تھی کہ راجپوتوں کے تعاون کے بغیر حکومت کو مستحکم نہیں رکھا جاسکتا تھا۔ اس لئے اس نے راجپوتوں میں شادیاں کیں۔ شہزادہ سلیم کی بھی راجپوتوں میں شادیاں ہوئیں۔ اس سیکولر پالیسی کی وجہ سے اشاعت اسلام ہند میں  رک گئی۔ ستمبر1579ء میں خوشامدی درباریوں نے اکبر کو ایک مجتہد کے طور پر بادشاہت کے منصب پہ  متعارف کروایا۔ جس کے بعد دین اکبری کا آغاز ہوا۔ جس کے خلاف مسلمانوں سے شدید رد عمل بھی آیا۔ حضرت مجدد الف ثانی نے اکبر سے توبہ کروائی اور عوام الناس کو اس فتنہ سے بچایا۔ اکبر کے مرنے کے ساتھ ہی یہ مذہب مکمل طور پر ختم بھی ہوگیا۔ پھر جہانگیر نے حکومت سنبھالی۔ اس کے بعد، اس کے بیٹے شہاب الدین محمد شاہجہاں نے حکومت کی باگ دوڑ سنبھالی۔

اورنگزیب عالمگیر، علماء اور امراء کے اسرار پہ تختِ سلطنت اسلامیہ ہندوستان پہ جلوہ افروز ہوئے۔ اورنگزیب عالمگیر  کے دور میں بغاوت کی وجہ سےجنگی  مہمات میں بہت بڑی فوج کا بوجھ اس وقت سلطنت ہند  کے کندھوں پہ لدا رہا۔ بغاوتوں، سرکش عناصر اور غداروں کی ریشہ دوانیوں کی وجہ سے مغل سلطنت کی گرفت کمزور ہوتی چلی گئی اور بالآخر مغل سلطنت اپنا استحقاق کھو گئی۔ مغل بادشاہ، بہادر شاہ ظفر، سلطنت ہند کے آخری مسلمان سربراہ  تھے، جن سے انگریزوں نے اقتدار چھینا۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

error: Content is protected !!