جمہوریت، مولانا اکبر شاہ نجیب آبادی کی نظر میں

اپنی کتاب تاریخ اسلام میں فرماتے ہیں جمہوریت کا نظامِ سلطنت انسان کو ایسی آزاد روش پر ڈالنا اور اس قدر خلیع الرسن بنانا چاہتا ہے کہ انسان زیادہ دیر تک ربّ شناسی اور اللہ پرستی کے خیالات دیر تک قائم نہیں رکھ سکتا. خالص جمہوری نظام سب سے زیادہ قوّی تحریک دہریت اور لامذہب کی ہے. جس طرح ریگستان میں کھیتی نہیں ہو سکتی، پانی سے باہر مچهلی زندہ نہیں رہ سکتی، تاریک اور کثیف ہوا میں انسان تندرست نہیں رہ سکتا، اسی طرح خالص جمہوری نظام حکومت کے ماتخت مذہبی خیالات، مذہبی پابندیاں، مذہبی عبادات نشوونما نہیں پا سکتے اور کوئی الہامی مذہب تادیر زندہ نہیں رہ سکتا۔ جمہوریت اسلام کی تعلیم کے سرا سر خلاف اور بنی نوع انسان کیلئے بڑی ہی خطرناک چیز ہے۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

error: Content is protected !!