جمہوریت، اہلسنت و الجماعت شافعی، شیخ ابو یحیی اللیبی رحمہ اللہ کی نظر میں

شمشیرِ بے نیام، نظام جمہوریت جس کے نام پر ساٹھ سال قبل عامۃ المسلمین سے قربانیاں طلب کی گئی تھیں؟۔۔۔ اس ریاست کے نزدیک تو”لا الہ الا اللہ” کا کردار بس یہی ہے کہ اسے کفریہ قانون سازی کرنے والی پارلیمان کی عمارت پر جلی حروف میں سجا دیا جائے۔ اسلامی جمہوریت کی اصطلاح استعمال کرنا بلکل ایسے ہی ہے، جیسے کوئی شخص اسلامی یہودیت اور اسلامی عیسائیت یا اسلامی مجوسیت کی اصطلاح استعمال کرے. اب بتائیے کہ کیا یہ ممکن یا جائز ہو سکتا ہے؟۔۔۔ یہ دو علیحده علیحده دین ہیں اس کی پیدائش سر تا پا کفر میں غرق مغرب میں ہوئی، اس کی پرورش مغرب کے حیا سے عاری ماحول نے کی اور فسق و فجور میں ڈوبی اس دنیا میں یہ نظام اوج کمال تک پہنچا اور آج یہ نظام مسلمانوں کی غفلت، ان کی حکومت کے ارتداد اور ان کے معاشروں کی کمزوری کے باعث مسلمان معاشروں میں پھیل چکا ہے۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

error: Content is protected !!